آج رات یہ آیت بوتل میں ڈال کر کچن میں رکھو دولت سنبھالنے کی طاقت رکھتے ہو تو تب عمل کرنا

آیت بوتل میں

پی ایف سی نیوز ! حضرت عائشہ صدیقہ ؓ سے روایت ہےکہ آپ ﷺ نے فرمایا کہ میرے پاس جبرائیل ؑ آئے یہ شعبان کی پندرویں رات ہے اس رات میں اللہ تعالیٰ جہنم سے اتنے لوگوں کو آزاد فرماتا ہے جتنی بنی قلب کے بکریوں کے بال ہیں ۔مگر ک۔افر اور عداوت کرنے والے رشتہ کاٹ۔نے والے ، ٹخنوں سے نیچے کپڑا لٹکانے والے والدین کی نافرمانی کرنے والے اور ش۔راب کے عادی ان لوگوں کی طرف اللہ تعالیٰ نظر رحمت نہیں فرماتا ۔

اسی طرح امام محمد غزالی ؒ فرماتے ہیں کہ ش۔راب کا عادی ، زن۔ا کا عادی ، ماں باپ کا نا فرمان، رشتہ داروں سے قطع تعلق کرنے والا ،ن۔شے واز اور چغ۔ل خور کی اس رات بخشش نہیں ہے ۔ اسی طرح کاہن،جادوگر اور تکبر کی وجہ سے ٹخنوں کے نیچے لٹکانے والا دو مسلمانوں کے درمیان پھوٹ ڈلوانے والے اور کسی مسلمان سے کینہ رکھنے والے کی بھی اس رات بخشش نہیں ہوتی ۔ جو کوئی بھی ان گناہوں میں شامل ہو تو وہ گناہوں سے توبہ کرلے ۔ آپ ﷺ کا فرمان عظیم جب پندرہ شعبان کی رات آئے تو اس میں عبادت کرو اور دن میں روزے رکھو ۔کیونکہ اللہ تعالیٰ غروب آفتاب کے بعد آسمان ودنیا پر خاص تجلی فرماتا اور کہتا ہے کہ ہے کوئی مجھ سے بخشش طلب کرنے والا کہ میں اسے بخش دوں ہے کوئی روزی طلب کرنے والا کہ میں اسے روزی دے سکوں ۔ شب برات میں اعمال نامے تبدیل ہوتے ہیں ۔لہذا ممکن ہوتو چودھویں شعبان کو روزہ رکھ لیا جائے تاکہ اعمال نامے کے آخری دن بھی ہمارا روزہ ہو۔

آج ہم آپکو یہ عمل بتانے جارہے ہیں اگر آپ زندگی میں ایک بار یہ عمل کرلیں تو اللہ تعالیٰ آپ کی تنگدستی کو خوشحالی میں بدل دے گا آپ کے رزق میں برکت دے گا ۔ وہ عمل یہ ہے کہ بعد نماز فجر وضو کی حالت میں آپ ایک مرتبہ سورۃ رحمان اپنے ہاتھ سے لکھ کر بوتل میں ڈال کر۔وہ بوتل آپ اپنے کچن میں رکھ دیں جہاں آپ کے رزق کے معاملات چلتے ہیں جہاں آپ کا کھانا پکتا ہے تو اللہ تعالیٰ آپ کے رزق میں کشادگی عطاء فرمائے گا۔ آپ کو شعبان کی پندرھویں رات کے بارے میں بتا دیں ایک روایت حضرت عائشہ صدیقہ ؓ فرماتی ہیں کہ ایک مرتبہ آپ ﷺ کو بستر پر تشریف نہ پایا تو آپ ﷺ کی تلاش میں نکلی کیا دیکھتی ہوں کہ آپ ﷺ مدینہ منورہ کے قبرستان یعنی جنت البقی میں موجود ہیں آپ ﷺ نے مجھے دیکھ کر فرمایا اے عائشہ ؓ کہ تم اس بات کا خوف رکھتی ہو ۔

کہ اللہ کے رسول ؐ تمہارے سلسلے میں کسی قسم کی کوئی ناانصافی کریں۔ میں نے عرض کیا یا رسولؐ میں نے سوچا کہ آپ ﷺ کی دوسری زوجہ کے ہاں تشریف لے گئے ہیںآپ ﷺ نے فرمایا شعبان کے پندرھویں شب اللہ تعالیٰ آسمان ودنیا کی طرف ایک خاص شان کی طرح نازل ہوتا ہے ۔قبیلہ قلب کی بکریوں کے بالو ں سے بھی زیادہ تعداد میں لوگوں کوبخشتا ہے۔شکریہ

Leave a Comment