گنا ہو ں میں ڈوبا ہوا انسان بھی رب انی مغلوب فانتصر ایک بار میرا یقین کر کے اتنی تعداد میں پڑھ لے

رب

دشمن کمزور ہو یا تگڑا،اس کا خوف ہمیشہ دماغ میں بنا ہی رہتا ہے۔ایسے تمام لوگ جو دشمن کے شر کیوجہ سے جانی و مالی نقصان کے اندیشوں میں گرفتار ہوں اور انہیں کئی بار نقصان اٹھانا پڑ ہی جاتااور خود کو مغلوب اور تنہا و بے یارومددگار سمجھتے ہوں تو پھرانہیں ان دو وظائف میں سے کوئی ایک عمل ہمیشہ پڑھتے رہنا چاہئے ۔

ہر نما زکے بعد سجدہ کی حالت میں جا کر یہ دعا پڑھیں۔رَبَ اَنیِ مَغلْوب فَانتَصِر اس دعا کو زیادہ سے زیادہ طاق تعداد میں پڑھیں اور پڑھتے ہوئے دشمن کا تصور کریں، اللہ پاک سے عاجزی کے ساتھ تصوراتی اور قلبی طور پر دعا کریں کہ اے اللہ عزوجل میں بہت کمزور ہوں، تو بہت زیادہ طاقت و عظمت والا ہے ، میں مغلوب ہوں تو میری مدد فرما۔ دوسرا عمل جو ہے وہ بڑا معروف ہے ۔اس عمل کو روزانہ نمازِ فجر سے پہلے یا بعد میں چار سو بار لازمی پڑھا کریں ۔حَسبْنَا اللَہ وَنِعمَ الوَکیلُ وَنِعمَ المَولیٰ وَنِعمَ النَّصیر یہ وظیفہ ایسے لوگوں کے لئے بہت مفید ہے جو مصیبت اور قرض میں جکڑے ہوئے ہیں

وہ لوگ جن کے گھروں میں بہت زیادہ مصیبتیں ہیں جو قرض کی وجہ سے بہت زیادہ تکلیف میں ہیں ان لوگوں کے لئے یہ وظیفہ حاضر خدمت ہے. بس چھوٹی سی آیت ہے ان شاء اللہ اس کے پڑھ لینے سے آپ کا قرض، مصیبت تکلیف ختم ہوجائے گی. تو یہ دعا ہے ایک چھوٹی سی یہ دعا حضرت نوحؑ کی ہے رَبِّ اَنِّی مَغْلُوب فانتصر اے اللہ میں بے بس ہو پس تو میری مدد فرما جو لوگ مصیبت تکلیف اور قرض میں گھرے ہوئے ہیں وہ زیادہ سے زیادہ اس آیت کو پڑھیں ان شاء اللہ اس کے پڑھنے سے بہت زیادہ فائدہ ہوگا اللہ پاک غیبی خزانے سے مدد فرمائے گا اور قرض سے نجات ملے گی ۔

اسے صبح شام سات یا گیارہ دفعہ پڑھ لینا بہتر ہےقرآن پاک کے ایک ایک حرف میں شفاہے.جو لوگ روزانہ آیات مبارکہ کی تلاوت کرتے اور باوضو رہتے ہیں اللہ کریم انکےلئے کشادگی پیدا کرتے ہیں.ایسے لوگ کبھی دنیاوی مسائل سے شاکی نہیں ہوتے اور نہ انہیں ڈپریشن ہوتا ہے.ان کا دل اور دماغ ہمیشہ پرسکون رہتا ہے.جیسا کہ سورہ فاتحہ کو روزانہ پڑھنے والوں کا معاملہ ہے .رسول اللہ ﷺ کا فرمان ہے کہ سورہ الفاتحہ میں موت کے علاوہ ہر مرض کے لئے شفا ہے توآقائے دوجہاں ﷺ کا فرمان اس کی ضمانت دیتا ہے کہ سورہ فاتحہ پڑھتے رہنے والوں پر آسانیاں پیدا ہوتی ہیں.

جو کوئی بھی سورہ فاتحہ کا عامل بن جاتا ہے اسکا بے تحاشا ذکر کرتا ہے تو ایسے لوگوں پر معاشی تنگی نہیں ہوگی، انہیں غیب سے رزق ملے گا،بیمار ہوں گے تو جلد صحت یاب ہوں گے.سورہ فاتحہ کے عامل جب کسی کو دم کرتے ہیں تو موذی امراض سے چھٹکارا حاصل ہوجاتا ہے.اگر کوئی انسان کسی مصیبت کا شکار ہوجائے اور کوئی راہ نہ دکھائی دے تو اسے چاہئے کہ چالیس روز تک سورہ فاتحہ ایک سو پچیس بار پڑھ لیا کرے۔اگر کسی مریض کی تیمارداری کے دوران اسکی شفا کے لئے اسکا ہاتھ پکڑ کر سات بار سورہ فاتحہ باوضو ہوکر پڑھی جائے تو وہ جلد صحت یاب ہوگا .

سرکہ ایک اسلامی غذا بھی ہے.اسکا استعمال طب اسلامی میں معروف رہا ہے ۔اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔آمین

اپنی رائے کا اظہار کریں