جس عورت میں ہو وہ چھوڑ جاتی ہے

عورت

اگر کوئی مرد نا.جائز تعلقات رکھے تو چالاک اور ہوشیار لیکن عورتیں عمل کرے تو فاحشہ اور بدچلن کردار عورت کو پوری طرح عیاں نہیں ہونا چاہیے کچھ تجسس باقی رہنا چاہیے جو اس کی جانب رغبت کو جوان رکھیں گا ورنہ سب آیا ہوا تو راستے جدا زنا پہلے عقل کو پھر نسل کو بگاڑ دیتی ہے

اللہ ہمیں ایسے گنا.ہوں سے محفوظ رکھے گرل فرینڈ تو کمزور لوگوں کی ہوتی کے مرد تو نکاح کرتے ہیں شادی سے پہلے والے تعلق اگر شادی کے بعد بھی دونوں خاندان برقراررکھے تو کبھی کوئی مسئلہ پیدا ہی نہ ہو زیادہ کی طلب انسان کو ناقدری بنا دیتی ہے کسی کے لیے ہر وقت اویلیبل رہیں گے تو لوگ اچھا نہیں بلکہ فالتو سمجھنے لگیں گے سب انسانوں سے آپ کی محبت ختم ہو جائے تو پھر چیزوں سے محبت ہونا شروع ہوجاتی ہے مختصر یہ کہ جب اپنا سکون کسی اور کے ہاتھوں میں ہو تو اس بے سکونی سے بڑھ کر کوئی دکھ نہیں وہ بھی تب جب کسی کا سکون ایک نا محرم کی صورت میں ہو یہ دو نشانیاں ہیں

جس عورت میں ہو وہ چھوڑ جاتی بے جو اکثر بات نہ مانے قدر اور نہ کرے اور رابطے میں نہ رہےسب کو دلاسا دینے والا شخص اکثر اپنے دکھوں میں اکیلا ہوتا ہے جس طرح انسان رزق پر عشق ہوتا ہے ٹھیک اسی طرح رزق بھی انسان پر عاشق ہوتا ہے

اپنی رائے کا اظہار کریں